تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

فیس بک اور انسٹاگرام کا طویل استعمال مردوخواتین میں جنسی کمزوری کا باعث بننے لگا

  20 دسمبر‬‮ 2016   |    10:57     |     صحت و زندگی

نیویارک(ڈیلی آزادنیوزڈیسک) ٹیکنالوجی کے اس دور میں فیس بک، انسٹاگرام اور دیگر سوشل میڈیا ویب سائٹس کا جادوسرچڑھ کر بول رہا ہے اور جسے دیکھو ان کے خبط میں مبتلا ہے، تاہم ایک نئی تحقیق میں سوشل میڈیا، بالخصوص فیس بک اور انسٹاگرام، کے ایک ایسے نقصان کا انکشاف منظرعام پر آ گیا ہے کہ لوگ کم از کم ان کے ’بے جا‘ استعمال سے تائب ہو جائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق برطانوی ماہرین کے اس تحقیقاتی سروے کے نتائج میں بتایا گیا ہے کہ فیس بک اور انسٹاگرام کا طویل استعمال مردوخواتین میں جنسی کمزوری کا باعث بن رہا ہے۔اس سروے میں آدھے سے زیادہ شرکاء نے اعتراف کیا کہ فیس بک اور انسٹاگرام پر رومانوی اور جسمانی فٹنس کے متعلق اپ ڈیٹس پڑھ پڑھ کر وہ اپنے جسم کے متعلق تحفظات کا شکار ہو گئے ہیں اور خودکو غیرمحفوظ، کمزور اور بیمار سمجھنے لگے ہیں۔ یہ تحقیقاتی سروے ویب سائٹ Pencourage.com کے ماہرین نے کیا ہے ، جس میں لوگوں سے مختلف سوالات کیے گئے۔ سروے کے شرکاء کی واضح اکثریت نے یہ بھی اعتراف کیا کہ وہ دوسرے لوگوں کی رومانوی پوسٹس پڑھنے کے بعد جنسی رغبت اور اپنے شریک حیات کی کشش کھو دیتے ہیں۔ تصاویر شیئر کرنے والی یہ سوشل میڈیا ویب سائٹس مردوں پر طاقتور اثرات مرتب کر رہی ہیں۔

دو تہائی مردوں نے اعتراف کیا ہے کہ ان ویب سائٹس کا زیادہ استعمال ان کی جنسی کارکردگی پر واضح طور پر اثرانداز ہوا ہے۔خواتین میں یہ اعتراف کرنے کی شرح ایک چوتھائی تھی۔ماہرنفسیات ڈاکٹر رچرڈ شیری کا کہنا ہے کہ ’’اس سے قبل کئی تحقیقات میں ثابت ہو چکا ہے کہ ہم چونکہ سمارٹ فونز پر زیادہ وقت گزارنے لگے ہیں اور لیے اپنے شریک حیات کے ساتھ وقت گزارنے کی شرح میں خاطرخواہ کمی واقع ہو چکی ہے، تاہم اس تحقیق میں اس سے آگے کے نتائج منظرعام پر لائے گئے ہیں۔ پہلی بار کسی تحقیق میں یہ بات سامنے لائی گئی ہے کہ فیس بک پر نیم عریاں تصاویر اور رومانوی تحاریر صارفین میں خوداعتمادی، بالخصوص جنسی اعتبار سے، میں کمی کا باعث بن رہی ہیں۔‘‘

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین تصاویر


>