تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

موٹی خواتین میں جڑواں بچے پیدا کرنے کی شرح میں اضافہ

  10 اپریل‬‮ 2017   |    02:28     |     صحت و زندگی

لندن(ڈیلی آزادنیوزڈیسک)ٹوئنز اینڈ ملٹیپل برتھس ایسوسی ایشن کے مطابق تحقیق25 سے 29 سال کی خواتین موٹی خواتین میں جڑواں بچے پیدا کرنے کی شرح میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ ماضی میں 45 اور اس سے زیادہ سال کی خواتین میں یہ شرح زیادہ تھی لیکن سال بہ سال بڑھتی ہوئی اس شرح میں اب اس عمر کی خواتین کا حصہ بڑھتا جا رہا ہے۔برطانیہ میںگزشتہ سال10 ہزار 901 خواتین نے جڑواں بچوں کو جنم دیا جن میں سے 169 نے بیک وقت تین اور تین خواتین نے چار یا اس سے زیادہ بچے پیدا کیے۔

تحقیق بتاتی ہے کہ ایک وقت میں ایک سے زیادہ بچوں کی پیدائش کا سبب موٹاپا ہے جو اس وقت 25 سے 29 سال کی عمر کے خواتین میں کافی پھیلا ہوا ہے۔ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اس وقت ہر پانچ میں سے ایک خاتون زائد الوزن ہے اور اس کی وجہ سے حمل گرنے، پیدائش سے پہلے یا اس کے فوری بعد موت کے خدشات میں اضافے کے ساتھ ساتھ ذیابیطس، وضع حمل میں پیچیدگیوں اور بعد از پیدائش بہت زیادہ خون نکلنے جیسے خطرات میں اضافہ ہو سکتا ہے۔ اس لیے حمل سے قبل اور دوران وزن کو قابو میں رکھنا بہت ضروری ہے

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
52%
ٹھیک ہے
24%
کوئی رائے نہیں
14%
پسند ںہیں آئی
10%
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>