تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

دودھ میں لاش پرلگانے والاکیمیکل ملانے کاانکشاف

  28 دسمبر‬‮ 2016   |    12:22     |     صحت و زندگی

لاہور(ڈیلی آزادنیوزڈیسک) سپریم کورٹ نے مضر صحت دودھ کی فروخت پر سخت نوٹس لے لیا'عدالت کا فوڈ اتھارٹی کی کارکردگی پرعدم اعتماد کا اظہار ' پنجاب فوڈ اتھارٹی کی بندشیں کھولتے ہوئے ڈی جی نورالامین کو پورے صوبے میں عدالتی نمائندے کے طور پر جانے اور دودھ کا ٹیسٹ کرانے کا حکم دیدیا جبکہ جسٹس ثاقب نثار نے ریماکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ شہریوں کوخالص دودھ اورپانی کی فراہمی ان کا بنیادی حق ہے،اللہ توفیق دے اس اہم معاملے کومنطقی انجام تک پہنچائیں گے۔تفصیلات کے مطابق منگل کے روز نامزد چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثارپر مشتمل2 رکنی بینچ نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں از خود نوٹس کیس کی سماعت کی،درخواست گزار بیرسٹر ظفراللہ نے عدالت کو بتایا کہ پی سی ایس آئی آر لیبارٹری میں ثابت ہو چکا ہے کہ کھلے دودھ کے علاوہ ڈبہ بند دودھ میں ڈیٹرجنٹ پاوڈرلاشوں پرلگایاجانے والاکیمیکل ودیگر کیمیائی مادے ملائے جاتے ہیں سپریم کورٹ نے قراردیاہے کہ بچوں کو دودھ کے نام پرزہر پلانیکی اجازت نہیں دی جائے گی،دودھ کی خرابی کامعاملہ منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا اگر اپنت بچوں کو کو صحیح دودھ نہیں دے سکتے تو ہم کام نہیں کر سکتے،عدالت نے لوکل کمیشن تشکیل دیتے ہوئے تفصیلی رپورٹ طلب کر لی جبکہ ڈی جی فوڈاتھارٹی پنجاب نورالامین مینگل نے عدالت کو بتایا کہ ناقص اورغیر معیاری دودھ بیچنے والی کمپنیوں کے خلاف قانون کے تحت نمٹا جا رہا ہے ، پانی کے300اور دودھ کے30نمونے لیبارٹری بھجوا ئے ہیںقواعدوضوابط کی خلاف ورزی پرالفضل فوڈ مینوفیکچرنگ کا لائسنس معطل کردیا ہے اس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ عدالت فوڈ اتھارٹی کی لیبارٹری سے آگاہ ہے

، جہاں ترازو اور چند چیزوں کے سواکوئی معیاری مشین موجود نہیں، عدالت نے فوڈ اتھارٹی کی کارکردگی پرعدم اعتماد کا اظہار کیا۔ججز نے ناقص دودھ فروخت کرنے والی کمپنیوں کے وکلاسے مخاطب ہوئے اورکہا کہ زہریلا دودھ پلا کر شہریوں کو مارنے کی کوشش نہ کی جائے عدالت بچوں کو زہریلا دودھ پلانے کی اجازت نہیں دے گی۔عدالت نے دودھ اور پانی کے نمونوں کی رپورٹ آئندہ سماعت پر پیش کرنے کا حکم دے دیااوردودھ فروخت کرنے والی کمپنیوں کا معیار جانچنے کے لئے لوکل کمیشن تشکیل دیتے ہوئے جامع رپورٹ طلب کر لی جبکہ کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک کیلئے ملتوی کر دی ہے ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>