تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

کینسر کی 12 علامات جنھیں نظرانداز نہ کریں

  19 جون‬‮ 2017   |    02:26     |     صحت و زندگی

کینسر ایسا مرض ہے جو اب قابل علاج تو ہے مگر اس کے جسم پر متعدد مضر اثرات مرتب ہوتے ہیں جبکہ ایڈوانس لیول کی بیماری عام طور پر لاعلاج ہوتی ہے۔ مگر کیا آپ کو معلوم ہے کہ بیشتر مردوں میں کینسر کا مرض دیگر امراض یا علامات کی شکل میں ظاہر ہوتا ہے اور چونکہ مرد ڈاکٹروں کے پاس جانا زیادہ پسند نہیں کرتے، اس لیے ان کی جانب سے اسے نظرانداز کردینا آسان ہوتا ہے۔ مگر یہ بہت ضروری ہے کہ آپ اپنے جسم کے بارے میں جانیں اور نیچے دی گئی غیرمعمولی تبدیلیوں یا درد وغیرہ پر ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ پیشاب کرنے میں مشکل اگر پیشاب کرنے میں مسلسل مشکل پیش آرہی ہو یا خون آرہا ہو، تو ڈاکٹر سے رجوع کریں کیونکہ یہ مثانے کے کینسر کی علامات ہوسکتی ہیں۔ طبی ماہرین کے مطابق بدقسمتی سے مثانے کے کینسر کی بیشتر نمایاں علامات پر لوگ غور اس وقت کرتے ہیں جب بیماری آخری اسٹیج کے قریب ہوتی ہے۔ جلد میں نمایاں تبدیلیاں

پچاس سال سے زائد عمر کے افراد میں جلد کے کینسر کا امکان خواتین کے مقابلے میں دوگنا زیادہ ہوتا ہے، اس سے کم عمر افراد میں بھی یہ مرض سامنے آتا ہے اور اس میں ہلاکتوں کی شرح بہت زیادہ ہے، ایک تحقیق کے مطابق مرد چونکہ خواتین کے مقابلے میں دھوپ میں زیادہ پھرتے ہیں اور سن اسکرین کا استعمال نہیں کرتے، جبکہ سر اور کانوں کو ٹوپی سے ڈھانپتے نہیں لہذا ان میں کینسر کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔ اسی طرح روایتی طور پر مرد خواتین کے مقابلے میں ڈاکٹروں کے پاس کم جاتے ہیں تو ان کے اندر کینسر کی جلد تشخیص ممکن نہیں ہوتی، جلد کے کینسر کی علامات میں جلد پر سیاہ دھبے، تل یا مسے وغیرہ قابل ذکر ہوتے ہیں جو کہ بڑھتے چلے جاتے ہیں۔ منہ میں چھالے یا درد منہ میں چھالے اگر ٹھیک ہوجائے تو پریشانی کی بات نہیں اور نہ ہی دانت کا درد قابل فکر ہوتا ہے، مگر جب یہ چھالے ٹھیک نہ ہو یا درد جم کر رہ جائے، مسوڑوں یا زبان پر سفید یا سرخ نشانات بن جائے یا جبڑوں کے قریب سوجن یا بے حسی محسوس ہو تو یہ منہ کے کینسر کی علامات ہوسکتی ہیں، خاص طور پر جو مرد سیگریٹ نوشی یا تمباکو استعمال کرتے ہیں ان میں اس کینسر کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے۔ ان علامات کی صورت میں ڈاکٹر سے فوری رجوع کرنا چاہئے۔ مسلسل کھانسی ایسی کھانسی جو تین ہفتے یا اس سے زائد عرصے تک برقرار رہے جبکہ بخار یا الرجی وغیرہ بھی نہ ہو تو یہ پھیپھڑوں کے کینسر کی ابتدائی علامت ہوسکتی ہے۔ خون کے کینسر کی صورت میں یہ یہ علامت ظاہر ہوتی ہے خاص طور پر اگر کھانسی میں خون آنے لگے۔ پھیپھڑوں کے کینسر کے شکار افراد کو سینے میں درد بھی ہوسکتا ہے جو سینے سے کندھوں یا نیچے بازو تک پھیلتا ہوا محسوس ہوتا ہے۔ فضلے میں خون اگر فضلے میں خون آرہا ہے تو یہ آنتوں کی کینسر کی علامت ہوسکتا ہے، اگر یہ علامت سامنے آئے تو فوری طور پر ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہئے کیونکہ کینسر سے ہٹ کر یہ کوئی اور مرض بھی ہوسکتا ہے، کیونکہ فضلے میں خون کا آنا معمولی نہیں ہوتا۔ معدے میں درد یا متلی اگر آپ کے معدے مین مسلسل درد رہتا ہے یا ہر وقت متلی کا احساس ہوتا ہے تو یہ غذائی نالی کے کینسر کی علامت ہوسکتی ہے، مگر خون اور لبلے کے کینسر کی صورت میں بھی یہ علامات ظاہر ہوتی ہیں۔ اکثر بخار یا انفیکشن کا شکار رہنا اگر آپ صحت مند ہیں مگر پھر بھی اکثر بخار رہتا ہے تو یہ خون کے کینسر کی ابتدائی علامت ہوسکتا ہے، اس کینسر کی ابتداءمیں جسم میں خون کے سفید خلیات کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوتا ہے جس کے نتیجے میں جسم کی انفیکشن کے خلاف لڑنے کی صلاحیت متاثر ہوتی ہے۔ نگلنے میں مشکل اگر کچھ ہفتے تک گلے میں تکلیف ہو اور چیزیں نگلنا مشکل ہوجائے تو یہ معدے یا گلے کے کینسر کی علامت ہوسکتا ہے، جبکہ کچھ ماہرین اسے پھیپھڑوں کے کینسر کی ابتدائی علامت بھی قرار دیتے ہیں۔ بہت زیادہ خارش اگر آپ کے جسم میں ہر وقت کارش کے نتیجے میں دانے ابھرتے رہتے ہیں، خاص طور پر ان جگہوں پر جہاں عام طور پر نہیں ہوتے جیسے ہاتھ یا انگلیاں وغیرہ تو ڈاکٹر سے رجوع کریں، عام طور پر یہ علامت بھی خون کے کینسر کا خطرہ ظاہر کرتی ہے۔ بغیر کسی وجہ کے وزن کم ہونا جسمانی وزن میں کمی تو ہوسکتا ہے اکثر افراد کو اچھا لگے مگر ایسا بغیر کسی وجہ کے ہو اور بھوک ختم یا کم ہوجائے تو پھر یہ باعث تشویش ہوسکتا ہے، ایسا جگر، آنتوں اور لبلے کے کینسر کے اثرات کی وجہ سے ہوسکتا ہے، جبکہ خون کے کینسر میں بھی ایسا ہوتا ہے۔ مسلسل تھکاوٹ ہر ایک کو جسمانی توانائی میں کمی کا کبھی نہ کبھی سامنا ہوتا ہے تاہم اگر ایسا ایک ماہ تک روزانہ ہو، سانس گھٹنے لگے جو پہلے کبھی نہ ہو تو یہ خطرے کی گھنٹی ہوسکتا ہے، خون کا کینسر ہر وقت تھکاوٹ کا باعث بن سکتا ہے، اکثر کینسر نہیں بھی ہوتا مگر ڈاکٹر سے معائنہ کروا لینا چاہئے کیونکہ کسی اور مرض کی علامت بھی ہوسکتا ہے۔ شدید سردرد اگر تو آپ آدھے سر کے درد کے شکار نہیں ہوتے یا سر میں درد بہت کم ہوتا ہے مگر اچانک ہر وقت سر درد رہنے لگا ہے تو یہ دماغی رسولی کی علامت ہوسکتا ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
86%
ٹھیک ہے
5%
کوئی رائے نہیں
2%
پسند ںہیں آئی
7%
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین تصاویر


>