تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

6 سال میں خاتون کا مسلسل 5 مرتبہ حمل ضائع ہوگیا، پھر بالآخر اصل وجہ سامنے آئی تو حیران پریشان رہ گئی، یہ تو سوچا ہی نہیں تھا کہ۔۔۔

  10 ‬‮نومبر‬‮ 2017   |    03:36     |     صحت و زندگی

لندن(نیوز ڈیسک)برطانوی شہر نیوکاسل سے تعلق رکھنے والی 23 سالہ لڑکی شینن ریڈ گزشتہ چھ سال کے دوران پانچ بار اسقاط حمل کے دردناک تجربے سے گزرچکی ہے۔ا س کا پہلا حمل محض ڈیڑھ ہفتے کے بعد ہی ضائع ہوگیا تھا۔اس نے دوبارہ حاملہ ہونے کی کوشش کی لیکن اس بار بھی اس کا حمل محض چند ہفتے

ہی برقرار رہ سکا۔ اس کے بعد یہ افسوسناک واقعہ پے درپے پیش آیا۔ آخری بار رواں سال جولائی کے مہینے میں جب اس کا حمل ضائع ہوا تو وہ تین ماہ کی حاملہ تھی۔پانچ بار حمل ضائع ہونے کے بعد بالآخر شینن کو معلوم ہوا ہے کہ وہ ’سٹکی بلڈ سنڈروم‘ نامی بیماری میں مبتلا ہے جس کی وجہ سے اس کا حمل برقرار نہیں رہ پاتا۔ دی مرر کے مطابق اس بیماری کو میڈیکل سائنس کی زبان میں ’اینٹی فاسفو لپرڈ سنڈروم (اے پی ایس)‘ کہا جاتا ہے۔ اس بیماری میں حمل کے کچھ عرصے بعد ہی آنول نال میں خون کے لوتھڑے بن جاتے ہیں جس کی وجہ سے کچھ ہی ہفتوں کے دوران حمل ضائع ہوجاتا ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

صحت و زندگی خبریں

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>