تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

مشرقی جرمنی کے کیمونسٹ دور کا ایک گاؤں نیلام عام میں ایک لاکھ 65 ہزار ڈالر میں فروخت

  13 دسمبر‬‮ 2017   |    07:23     |     دلچسپ و عجیب

برلن(ڈیلی آزاد)دنیا بھرمیں املاک کی نیلامی عام بات ہے مگر مشرقی جرمنی کے کیمونسٹ دور کا ایک گاؤں نیلام عام میں ایک لاکھ 65 ہزار ڈالر یعنی ایک کروڑ 65 لاکھ روپے میں فروخت ہواہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق جرمنی میں گاؤں کی انوکھی نیلامی ’کارھاوزن‘ نیلام گھر کی جانب سے برلن میں کی گئی۔الفینہ نامی اس گاؤں کے بوسیدہ مکانات اور اراضی کے خریدار کی شناخت خفیہ رکھی گئی ہے۔

نیلا م مرکز نے خانما برباد بستی کی قیمت ایک لاکھ 47 ہزار ڈالر رکھی تھی۔اس نیلامی میں حصہ لینے والے اکلوتے خریدار نے ایک لاکھ پینسٹھ ہزار ڈالر ادا کرنے کا اعلان کرکے اسے خرید لیا۔مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق یہ گاؤں پہلے بھی متعدد افراد کی ملکیت رہا ہے۔ تاہم اسے نیلام عام میں پیش کرنااپنی نوعیت کا منفرد واقعہ ہے۔یہ گاؤں آج سے 27 سال پہلے مشرقی اور مغربی جرمنی کے اتحاد سے قبل غربت کے ہاتھوں ختم ہوگیا تھا۔ مشرقی جرمنی کے علاقے آج بھی اپنی پسماندگی اور غربت، اجرت اور ریٹائر افراد کی پنشن کے حوالے سے مغربی جرمنی سے مختلف ہے۔برلن سے 120 کلو میٹر دور 16 ہزار 800 مربع میٹر گاؤں میں آج کل صرف 20 افراد رہتے ہیں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

دلچسپ و عجیب خبریں

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>