تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

لالہ موسیٰ میں 12 سالہ حامد کو کچلنے والی گاڑی کا اصل مالک کون نکلا؟ حقیقت سامنے آتے ہی سب حیران رہ گئے

  12 اگست‬‮ 2017   |    11:38     |     تازہ ترین

اسلام آباد (ڈیلی آزادنیوز ڈیسک) لالہ موسیٰ میں 12 سالہ حامد کو کچلنے والی گاڑی سے متعلق مزید انکشافات سامنے آگئے ۔ نجی ٹی وی کے مطابق اسکواڈ میں موجود گاڑی بی ایم ڈبلیو جس کا نمبرایس ایس875 ہے دراصل اس گاڑی پر موجود نمبر بی ایم ڈبلیو نہیں بلکہ ہائی روف بولان کا ہےتاہم لالہ موسی کے قریب بچے کو کچلنے والی

گاڑی میں وزیراعظم 2دن پہلے سوار تھے اور اس میں سفر بھی کیا تھا اوراسکو چلانے والا شخص سفید شلوار قمیض میں ملبوس تھا۔ ایسی خبریں بھی منظر عام پر آرہی ہیں کہ نوازشریف کے زیر استعمال یہ گاڑی وزیراعظم ہائوس کی گاڑی تھی۔لالہ موسیٰ میں 12 سالہ حامد کو کچلنے والی گاڑی سے متعلق مزید انکشافات سامنے آگئے ۔ نجی ٹی وی کے مطابق اسکواڈ میں موجود گاڑی بی ایم ڈبلیو جس کا نمبرایس ایس875 ہے دراصل اس گاڑی پر موجود نمبر بی ایم ڈبلیو نہیں بلکہ ہائی روف بولان کا ہےتاہم لالہ موسی کے قریب بچے کو کچلنے والی گاڑی میں وزیراعظم 2دن پہلے سوار تھے اور اس میں سفر بھی کیا تھا اوراسکو چلانے والا شخص سفید شلوار قمیض میں ملبوس تھا۔ ایسی خبریں بھی منظر عام پر آرہی ہیں کہ نوازشریف کے زیر استعمال یہ گاڑی وزیراعظم ہائوس کی گاڑی تھی۔لالہ موسیٰ میں 12 سالہ حامد کو کچلنے والی گاڑی سے متعلق مزید انکشافات سامنے آگئے ۔ نجی ٹی وی کے مطابق اسکواڈ میں موجود گاڑی بی ایم ڈبلیو جس کا نمبرایس ایس875 ہے دراصل اس گاڑی پر موجود نمبر بی ایم ڈبلیو نہیں بلکہ ہائی روف بولان کا ہےتاہم لالہ موسی کے قریب بچے کو کچلنے والی گاڑی میں وزیراعظم 2دن پہلے سوار تھے اور اس میں سفر بھی کیا تھا اوراسکو چلانے والا شخص سفید شلوار قمیض میں ملبوس تھا۔ ایسی خبریں بھی منظر عام پر آرہی ہیں کہ نوازشریف کے زیر استعمال یہ گاڑی وزیراعظم ہائوس کی گاڑی تھی۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
17%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
33%
پسند ںہیں آئی
50%
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>