تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

ملک میں اووربلنگ اور بجلی چوری میں سرکاری ملازمین ملوث

  11 اکتوبر‬‮ 2017   |    10:54     |     کارو بار

اسلام آباد(ویب ڈیسک ) وفاقی وزیر براۓ توانائی سردار اویس احمد خان لغاری نے ملک میں اووربلنگ اور بجلی چوری میں سرکاری ملازمین کے ملوث ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں سب سے بڑا مسئلہ اوور بلنگ ہے، بجلی چوری کا سارا بوجھ عام صارفین پر اوور بلنگ کی صورت میں پڑتا ہے،

بجلی چوری اور اوور بلنگ کی روک تھا م کیلئے قانون سازی کر رہےہیں،اوور بلنگ کے خاتمے کیلئے پری پیڈ میٹر اور ایس ایم ایس کے ذریعے بل متعارف کرانے سمیت دیگر اقدامات اٹھائیں گے۔ بجلی کی سپلائی بڑھا کر حکومت نے لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا ایک وعدہ پورا کر دیاہے،آئندہ چند ماہ میں ضرورت سے زیادہ بجلی ملک میں دستیاب ہوگی۔وفاقی وزیر براۓ توانائی منگل کو قومی اسمبلی میں تحریک انصاف کے ساجد نواز اور دیگر کے میٹر لگوانے اور بل ادا کرنے کے حوالے سے لوگوں کی حوصلہ شکنی کا موجب بننے والی بلا جواز متجاوز بلنگ سے متعلق توجہ دلائو نوٹس کا جواب دے رہے تھے ۔وفاقی وزیر توانائی اویس احمد خان لغاری نے کہا کہ یہ ایشوز ہیں حکومت نے اس میں بہتری لائی ہے ٹرانسمیشن لائنیں بہتر کیں بجلی کی پیداوار بڑھائی ہے لوڈشیڈنگ کم ہوئی ہے ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کی تقسیم اور دیگر معاملات پر ابھی خامیاں ہیں، ہم نے اس بارے میں اقدامات اٹھائے ہیں، ایچ آر میں تبدیلیاں کرنے کی ضرورت ہے، بجلی چوری کی وجہ سے میٹر والے ان کا بوجھ برداشت کرتے ہیں۔اووربلنگ ہے زائد بل بھیجنے کو بجلی چوری کی طرح جرم ثابت کرنے اور سزا کیلئے نیا قانون لا رہے ہیں۔ اووربلنگ اور بجلی چوری کی وجوہات ایک دوسرے سے جڑی ہیں، اس میں محکمہ بھی ملوث ہوتا ہے۔پاکستان کا سب سے بڑامسئلہ اوور بلنگ ہے۔ آئندہ سیشن میں تمام ایشوز ایوان میں رکھیں گے جہاں اس پر بحث کرائی جائے۔ یہ ہماری چھ ماہ کیلئے ترجیح ہوگی کہ صارفین کو غلط بل سے نجات دیں۔ اویس لغاری نے کہا کہ بڑے چیلنجز ہیں، ہم نے سپلائی کا وعدہ پورا کر دیا ہے اووربلنگ اور دیگر مسائل بھی حل کریں گے۔اویس لغاری نے کہا کہ کے پی کے کے ممبران کا اجلاس بلالیں گے۔ بجلی چوری بھیہے، یہ تقسیم کار کمپنیوں میں بڑے مسائل میں سے ہے، ہمیں ٹرانسفارمرز اپ گریڈ کرنے فیڈر لائنیں بہتر بنانے کیلئے دس سے پندرہ ارب روپے درکار ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ بجلی چوری بہت بڑا مسئلہ ہے، یہ مسئلہ ممبران کی مدد سے ڈسکوز نے حل کرنا ہے، یہ معاملہ ہائوس میں تفصیلی زیر بحث لائیں گے۔ پری پیڈ میٹر ز متعارف کرانے ایس ایم ایس کے ذریعے بل متعارف کرانے سمیت دیگر اقدامات اٹھائے جائیں گے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
50%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
50%
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>