تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

پراپرٹی اور ٹوکن ٹیکس نادہندگان کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا فیصلہ،300سے زائد کمرشل اور رہائشی جائیدادیں سر بمہر

  5 دسمبر‬‮ 2017   |    08:50     |     تازہ ترین

راولپنڈی05دسمبر(ڈیلی آزاد)محکمہ ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول راولپنڈی نے پراپرٹی اور ٹوکن ٹیکس نادہندگان کے خلاف سخت قانونی کارروائی کا فیصلہ کر لیا ۔ڈائریکٹر ایکسائز راولپنڈی تنویر عباس گوندل نے اے پی پی کو بتایاکہ بعض ناگزیر وجوہات کی بناء پر گذشتہ ماہ کے دوران چند دن کے لیے ہائوس ٹیکس ریکوری کا عمل تعطل کا شکار رہا جس کی وجہ سے اہداف حاصل نہ کیے جا سکے تاہم اب ای ٹی او زون 1اور 2کو رواں ششماہی کیلئے 31 دسمبر تک پراپرٹی ٹیکس وصولی کے مقررہ ٹارگٹ12 کروڑ روپے کے حصول کے لیے ریکوری کا عمل تیز تر کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ۔

تنویر عباس گوندل نے اے پی پی کو بتایا کہ اس ضمن میں اہداف کے حصول کے لیے سخت ترین کارروائی عمل میں لائی جا ئے گی اور پراپرٹی ٹیکس نادہندگان کی جائیدادیں سر بمہر کر دیا جائے گا جبکہ نادہند گان کی جانب سے پراپرٹی ٹیکس قومی خزانے میں جمع کرائے جانے تک جائیدادوں کو ڈی سیل نہ کرنے کی ہدایت کر دی گئی ہے ۔ڈائریکٹر ایکسائز کے احکامات پرای ٹی او زون1 سہیل صابر اور ای ٹی او زون 2 ریاض قریشی نے تمام سرکل انچارجز کو مقررہ اہداف کے حصول کے لیے تندہی سے کام کرنے کے احکامات دے دیئے ۔ذرائع نے اے پی پی کو بتایاکہ اسی طرح گاڑیوں کے ٹوکن ٹیکس ڈیفالٹرز کے خلاف بھی سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔اور عوام کو ہدایت کی گئی ہے کہ عوام اپنے ذمہ واجب الادا ٹیکسز کی بروقت ادائیگی کر کے قانونی کارروائی سے بچیں ۔واضح رہے کہ گذشتہ ماہ ٹیکس ڈیفالٹرز کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 300سے زائد کمرشل اور رہائشی جائیدادیں سر بمہر کی گئیں جبکہ ایک کروڑ چالیس لاکھ کے قریب بقایا جات کی وصولی کی گئی ،ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ٹیم نے گاڑیوں کی چیکنگ کا سلسلہ بھی گذشتہ ماہ شروع کر دیاتھا ۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین

loading...

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>