تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

عوام کیلئے صبح صبح بڑی خوشخبری آگئی

عوام کیلئے صبح صبح بڑی خوشخبری آگئی

  11 جنوری‬‮ 2017   |    07:24     |     پاکستان

لندن(ڈیلی آزادنیوز ڈیسک ) معاشی اور مالیاتی پہلوؤں پر لندن کے معروف ترین جریدے ’’اکانومسٹ‘‘ کے مطابق رواںسال تمام اسلامی ممالک کے مقابلے میں پاکستان کی معاشی ترقی سب سے تیز رہے گی۔اکانومسٹ ویب سائٹ پر شائع تازہ ترین ڈیٹا کو دیکھتے ہوئے ہارورڈ یونیورسٹی نے پیشگوئی کی ہے کہ اگلے عشرے میں پاکستان میں ترقی کی شرح 5 فیصد پر برقرار رہے گی۔جریدے کی رپورٹ کے مطابق پاکستانی معیشت کی شرح نمو رفتار کے لحاظ سے انڈونیشیا، ملائیشیا، ترکی اور مصر سے آگے رہے گی ٗپاکستان میں جی ڈی پی کی شرح اس سال 5.3 تک رہے گی، اس طرح پاکستان کی معاشی ترقی اسے دنیا کا پانچواں سب سے اہم ملک بناتی ہے ٗجریدے کی رپورٹ میں کہا گیا کہ سال 2017 میں پاکستان کی معاشی ترقی 5.3 رہے گی تاہم یہ 2016 میں 5.7 تھی جو اس سال کم رہے گی۔ اس کا مطلب ہے کہ پاکستانی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو چند ضروری اقدامات اٹھانے ہوں گے تاکہ معیشت کو درست سمت پر گامزن کیا جاسکے۔

واضح رہے کہ 2014 میں اکانومسٹ نے ہی پاکستان کے بارے میں کہا تھا کہ وہ جلد دنیا کی چھٹی تیزرفتار معیشت بن جائیگا لیکن جریدے کے مطابق پاکستان کا عمومی تاثر بھی اس ضمن میں ایک رکاوٹ بنا ہوا ہے۔جرید کے مطابق اس سال دنیا کی تیز رفتار معیشتوں میں بھارت (7.5 فیصد)، ویت نام (6.6 فیصد)، فلپائن (6.4 فیصد) اور چین بھی 6.4 فیصد پر شامل ہے۔ لیکن یہ رفتار بھی مضبوط اسلامی ممالک سے بہت زیادہ ہے مثلاً انڈونیشیا 5.2 فیصد، ملائیشیا 4.6 فیصد، مصر 4.0 فیصد اور ترکی 2.9 فیصد پر ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

تازہ ترین تصاویر


>