اسلام آباد اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے الزامات کا حقائق سے " /> Daily Azad
تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

شاعر فرحت عباس شاہ

فرحت عباس شاہ کا شمار اردو زبان کے صف اول کے شُعراء میں ہوتا ہے۔ وہ بین الاقوامی سطح پہ ایک اکانومسٹ اور اسلامک مائیکروفنانس ایکسپرٹ کے طور پر جانے جاتے ہیں۔
امجد ثاقب نے جو کچھ کیا ہے۔ اس کے لئے صرف ایک مثال ہے اور وہ اختر حمید خان کی ہے۔ انہوں نے بھی بیورو کریسی سے استعفٰی دیا اور ضرورت مند لوگوں کو چھوٹے چھوٹے قرضے دینے کی روایت شروع کی اور پھر کراچی میں دنیا کی سب سے بڑی کچی بستی پکے ارادوں کی آبادی بن گئی۔ اختر حمید خان کی بات پہلی بار میں نے جس سے سُنی تھی وہ کسی اور راستے پر نکل گیا۔ اس کی اہلیہ بہت اہل خاتون تھی اللہ کرے وہ کہیں ہو۔ روشانے ظفر نے بھی اس سفر سے اپنا آغاز کیا ہے۔ میرے دل کے قریب فرحت عباس شاہ نے اس روایت کو کوئی اور حکایت بنانے کی کوشش کی ہے۔ اس کے خیال میں اسلامک اکنامک سسٹم کی قرضے کی بنیاد سے آگے کی کوئی چیز ہے۔ رسک شیئر کیا جائے تو کوئی بات بنے۔ نفع نقصان میں شراکت داری ایک رشتہ داری بناتی ہے جو فطری اور ابدی ہے۔ روپے پیسے کے علاوہ گائیں بکریاں مال مویشی سے کاروباری سانجھ پیدا ہوتی ہے۔ سود کے خلاف ایک جہاد میں حمیرا اویس بھی فرحت کے ساتھ ہے۔ سود کے خلاف حمیرا کی کتابیں امریکہ میں چھپ رہی ہیں۔ ڈاکٹر امجد ثاقب نے اپنے سفر کو بہت بلندیوں تک پہنچایا ہے۔ سربلندی فرحت شاہ کو بھی ملی ہے
 

"فرحت عباس شاہ " کی شاعری

1 - تمہارا پیار مرے چارسو ابھی تک ہے

2 - لاکھ دوری ہو مگر عہد نبھاتے رہنا

           
>