تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

کیامیں وہ واحدشخص ہوں جسے اوم پوری کے انتقال کی خوشی ہے؟

  7 جنوری‬‮ 2017   |    02:28     |     شوبز

ممبئی (ڈیلی آزادنیوزڈیسک)بولی وڈ کے معروف اداکار اوم پوری کے اچانک انتقال پر دنیا بھر کی انٹرٹینمنٹ انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے غم ذدہ ہیں، تاہم ایسے موقع پر کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جنہیں اداکار کی موت کی خوشی ہے۔ ہندوستان سے تعلق رکھنے والے کئی افراد نے سوشل میڈیا پر اوم پوری کے انتقال کی خوشی منائی، ایک صاحب نے گالی دیتے ہوئے کہا کہ ‘کیا میں وہ واحد شخص ہوں جسے اوم پوری کے انتقال کی خوشی ہے’۔ جبکہ ایک صارف نے کہا کہ ‘اوم پوری کے انتقال کی بےحد خوشی ہے، ایسی گندگی ہندوستان میں دوبارہ پیدا نہیں ہونی چاہیے’۔ اور ایسے کئی پیغامات معروف اداکار کے انتقال کے بعد سوشل میڈیا پر شیئر کیے گئے۔ اس موقع پر بولی وڈ اداکارہ سوارا بھاسکر نے ان تمام لوگوں کو کرارا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ‘جو خود پر دیش بھگت کا نقاب چڑھائے رکھتے ہیں، آج ان لوگوں کی گندگی نظر آ گئی، جن میں نہ ہی انسانیت ہے اور نہ ہی شرافت، اوم پوری وہ انسان ہیں جنہوں نے ہندوستان کو تم سے بہت زیادہ عزت دلوائی’۔ سوارا کا مزید کہنا تھا کہ ‘آج کل حب الوطنی کے نام پر سراسر گندگی دکھائی جارہی ہے، اوم پوری نے ہندوستان کے لیے ان تمام لوگوں سے بہت زیادہ کیا، جتنا انسانی شکل میں یہ گندگیاں کبھی سوچ بھی سکیں’۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال اوم پوری نے اوڑی حملے پر پڑوسی ملک سے کشیدگی کے دوران پاکستانی فنکاروں پر پابندی لگانے کے خلاف آواز اٹھائی تھی، جس کے بعد ان پر مقدمہ بھی درج کیا گیا تھا۔

ایک لائیو شو میں انٹرویو دیتے ہوئے اوم پوری نے کہا تھا کہ ’جب حکومت کوئی ایکشن لے، تو ہم سب کو خاموش رہنا چاہیے، میں 6 مرتبہ پاکستان کا دورہ کرچکا ہوں، مجھے وہاں سے ہمیشہ پیار ہی ملا ہے، اگر پاکستانی اداکار ہندوستان میں کام چھوڑ کر چلے جائیں تو ہندوستان کا بھی نقصان ہوگا‘۔ اس بیان کے بعد انہیں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
67%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
33%
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>