تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

قیا مت والے دن جب ان لو گو ںکو اٹھا یا جا ئیگا تو

  3 دسمبر‬‮ 2017   |    06:58     |     ڈیلی آزاد سپیشل

انقرہ(ڈیلی آزادنیو زڈیسک )مردوں میں خود لذتی کی عادت کوئی ایسی اچنبھے کی بات نہیں رہی۔بالغ ہونے کے بعد نہ صرف کنوارے بلکہ بسا اوقات شادی شدہ مرد بھی اس لت سے خود کو نجات نہیں دلا پاتے۔ تاہم اس عادت کے حوالے سے ایک ترک مذہبی شخصیت کا بیان سوشل میڈیا پر خاص اہمیت اختیار کر چکا ہے۔ایک ٹی وی پروگرام کے دوران ترک عالم دین مشاہد شہاد نے

سوال و جواب کی نشست کے دوران بتایا کہ وہ مرد جو خود لذتی یا مشت زنی کی لت میں مبتلا ہیں ،انھیں جب موت کے بعد اٹھایا جا ئے گا تو ان کے ہاتھ حاملہ ہو جائیں گے۔ایک نوجوان نے سوال کیا کہ اس کی شادی ہو چکی ہےلیکن تاحال وہ اس لت سے چھٹکارہ نہیں پا سکا۔اس پر مذہبی رہنما نے برجستہ جواب دیا کہ اگر آپ کنوارے ہوتے تو میں آپ کو شادی کا مشورہ دیتا لیکن جب آپ شادی شدہ ہو کر بھی خود کو باز نہیں رکھ پا رہے تو میں آپ کو کیا کہہ سکتا ہوں؟۔ مذہبی شخصیت کے اس بیان پر سوشل میڈیا پر نئی بحث چھڑ گئی ہے۔ ایک جانب اس بیان کی حمایت میں آوازیں بلند ہو گئی ہیں تو دوسری جانب اسے جدید سائنس سے متصادم قرار دیا جا رہا ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

ڈیلی آزاد سپیشل

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>