تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

جب مجھے ٹیم سے ہٹا دیا گیا تو عمران خان نے مجھے دوبارہ ٹیم میں جگہ دلوائی ، گنگولی نے بالآخربڑے راز سے پردہ چاک کردیا

  24 ‬‮نومبر‬‮ 2017   |    10:23     |     کھیل

کولکتہ (نیوز ڈیسک) بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان ساروگنگولی کا نام بھارتی کرکٹ کے اہم ترین کرداروں میں ہوتا ہے۔وہ 1995سے 2008تک بھارتی ٹیم کا ایک بے مثال سرمایہ تھے۔ گنگولی اپنے دور کے اوپننگ بلے باز تھے اور ان کا شمار صف اول کے بیٹسمینوں میں ہوتا تھا۔ ان کا کہنا ہے کہ میری زندگی کا تاریک دور اس وقت شروع ہوا

جب 2005میں مجھے کپتانی سے ہٹا کر ٹیم سے بھی نکال باہر کردیا گیا۔ میں کبھی بھی نہیں سمجھ پایا کہ میرے ساتھ ایسا کیوں کیا گیا۔ میں نے 15000رنز سکور کیے ۔ سنچریاں سکور کیں ۔ مشکل میچز جتوائے لیکن کپتانی سے ہٹانے کے ساتھ ساتھ ٹیم سے نکالا جانا میری سمجھ سے بالاتر تھا۔ میں ہر وقت بہت شدید غصے میں رہتا تھا اور کولکتہ سٹیڈیم میںغصے کی حالت میں دوڑیں لگاتا تھا ایک بار میں نے اسی غصے کی حالت میں 21دوڑیں لگا ڈالیں۔ تب مجھے پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان عمران خان ملے جنھوں نے مجھے ایسے الفاظ کہے جو میں آج تک کبھی نہیں بھول سکا۔ اور ان الفاظ نے مجھے ٹیم میں کم بیک میں بھی مدددی۔ انھوں نے کہا تھا ""جب تم اونچا اڑتے ہو تو تمھیں سیاہ بادل بھی گھیر سکتے ہیں۔ لیکن یہی بادل جذبہ پیدا کرتے ہیں کہ انسان ان بادلوں سے بھی اونچا اڑنے لگے۔" انھوں نے کہا کہ انھی الفاظ کو لےکر میں نے ڈومیسٹک ایونٹس میں شاندار کارکردگی دکھائی اور 2006میں ٹیم میں واپس آگیا اور پھر 2008میں اپنی مرضی سے ریٹائرمنٹ لے لی۔واضح رہے کہ سارو گنگولی اس وقت بنگال کرکٹ ایسوسی ایشن کے صدر ہیں۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کھیل خبریں

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>