تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

آئی سی سی نے اینٹی کرپشن یونٹ کو بیدار کر دیا، دو ماہ میں تین انٹرنیشنل کپتانوں کو میچ فکسنگ کی پیشکش

  6 دسمبر‬‮ 2017   |    07:07     |     کھیل

کراچی( ڈیلی آزاد) کرکٹ کے کھیل میں کرپشن کی تیز گھنٹیوں نے آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کو بیدار کر دیا، دو ماہ کے قلیل عرصے میں تین انٹرنیشنل کپتانوں کو میچ فکسنگ کی پیشکش نے پریشانی بڑھا دی، سرفراز احمد اور گریم کریمر نے فوری طور پر مطلع کر دیا مگر تیسرے قائد کی شناخت مستحکم ہونا باقی ہے ،سات مختلف معاملات کی تحقیقات جاری ہیں، اے سی یو کے جنرل منیجر الیکس مارشل نے برصغیر اور متحدہ عرب امارات میں چھوٹے ٹورنامنٹس کے انعقاد پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے انڈر ایج کرکٹرز تک رسائی کے خدشات کی بھی نشاندہی کردی،انسداد بدعنوانی کے نئے کوڈ کے تحت کام شروع کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی کا اینٹی کرپشن یونٹ بدعنوانی کے سات ایسے واقعات کی تحقیقات کر رہا ہے جن میں عالمی کرکٹ کے تین کپتانوں سے دو ماہ کی قلیل مدت میں بدعنوان عناصر کے رابطوں کے معاملات بھی شامل ہیں،ان کپتانوں میں سے دو کے نام پہلے ہی سامنے آچکے ہیں کیونکہ پاکستان کے سرفراز احمد اور زمبابوے کے گریم کریمر نے بدعنوانی کی پیشکش ہونے کے ایک گھنٹے کے اندر متعلقہ حکام کو آگاہ کردیا تھا جبکہ اسی نوعیت کے ایک اور واقعے میں ملوث تیسرے قائد کی شناخت مستحکم نہیں ہو سکی اور گورننگ باڈی نے فی الحال اس کے بارے میں کسی بھی قسم کے تبصرے سے انکار کردیا ہے ۔آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی جیتنے والے پاکستانی کپتان سرفراز احمد سے اکتوبر میں بدعنوانی کیلئے ابوظہبی میں رابطہ کیا گیا جبکہ اسی ماہ کے دوران زمبابوین کپتان گریم کریمر کو زمبابوین کرکٹ بورڈ کے ایک رکن نے ویسٹ انڈیز کیخلاف ٹیسٹ میچ کو فکسڈ کرنے پر اکسایا لیکن دونوں واقعات میں متعلقہ اتھارٹیز کو فوری طور پر مطلع کر دیا گیا۔ ذرائع کے مطابق بدعنوان عناصر کی جانب سے ہائی پروفائل پلیئرز تک رسائی اور پیشکش آئی سی سی کیلئے خطرے کی گھنٹی سے کم نہیں ،اگرچہ پلیئرز کی جانب سے مثبت طرز عمل اس بات کا گواہ ہے کہ گورننگ باڈی کے ایجوکیشن پروگرامز کارآمد ثابت ہو رہے ہیں لیکن اس حوالے سے بڑھتے ہوئے واقعات نے اینٹی کرپشن یونٹ کے سربراہ الیکس مارشل کو چوکنا کردیا ہے جو برٹش پولیس فورس میں طویل عرصے تک خدمات کی انجام دہی کے بعد ستمبر میں اپنا کام شروع کر چکے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کو برصغیر اور متحدہ عرب امارات میں نجی طور پر کرائے جانے والے مائیکرو ٹورنامنٹس کی بڑھتی ہوئی تعداد پر شدید تحفظات ہیں جن میں مقامی کھلاڑیوں کے علاوہ سابق سٹارز کی خدمات بھی مستعار لی جاتی ہیں اور اسی راستے سے بدعنوانی کا زہر پھیلانے والے بدعنوان عناصر کھیل میں داخل ہوتے اور پھر بڑی کرکٹ تک پہنچ کر بھیانک واقعات کا باعث بنتے ہیں۔ آئی سی سی ذرائع کے مطابق کھلاڑیوں کو پانچ ہزار سے لے کر ایک لاکھ پچاس ہزار ڈالرز تک کی مختلف آفرز کی جاتی ہیں اور خواتین کے علاوہ انڈر ایج کرکٹ کے میچز بھی فکسرز کی دلچسپی کا باعث بننے لگے ہیں۔ ایج گروپس کرکٹ پر بدعنوان عناصر کے ممکنہ حملوں کی ایک اہم وجہ یہ بھی ہے کہ جب ان میں سے کچھ ترقی کے مراحل طے کر کے آگے جائیں تو ان کے ساتھ معاملات طے کرنے میں آسانی ہو اور ان سے ممکنہ طور پر فائدہ اٹھایا جا سکے۔ واضح رہے کہ ستمبر کے بعد آئی سی سی کے اینٹی کرپشن کوڈ میں نظر ثانی کرتے ہوئے بدعنوانی کے معاملات کی تحقیق کرنے والے افراد کو یہ پاور دے دی گئی ہے کہ وہ کسی بھی لیول پر کھیلنے والے کرکٹرز،کوچز اور دیگر آفیشلز کے موبائل فونز معلومات کیلئے اپنے قبضے میں لے سکتے ہیں جس کی بہرحال موجودہ حالات میں وجہ بھی بنتی ہے اور آفیشلز کو تحقیق کرنے والوں کے ساتھ تعاون کرنا ہی ہوگا لیکن انکار کرنے والے کسی بھی فرد پر دو سالہ پابندی عائد کی جا سکتی ہے ۔ نئے کوڈ کے نفاذ کے ساتھ ہی اینٹی کرپشن یونٹ کے سربراہ الیکس مارشل فعال ہو گئے ہیں جو رواں ہفتے ایڈیلیڈ پہنچ کر آسٹریلین فیڈرل پولیس اور دیگر متعلقہ اداروں کے ساتھ میٹنگ میں ان خطوط پر غور کریں گے کہ رابطوں اور معلومات کے تبادلے کے نظام میں کس طرح بہتری ممکن ہوگی جبکہ انہوں نے بعض دوسرے ممالک تک بھی اسی حوالے سے اپنا دائرہ کار بڑھانے پر نگاہ رکھی ہوئی ہے اور آنے والے عرصے میں الیکس مارشل دنیا بھر میں جا کر نہ صرف مقامی انسداد بدعنوانی یونٹس کو نئے کوڈ سے متعلق آگاہ کریں گے بلکہ ان کے ساتھ معلومات کے تبادلے کیلئے بھی بات چیت کی جائے گی۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کھیل خبریں

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>