تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

پاکستان نے آئی ٹی کے شعبے میں بھارت کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

  24 ‬‮نومبر‬‮ 2017   |    11:52     |     ٹیکنالوجی

ممبئی(ویب ڈیسک)بھارت جہاں آبادی کے حوالے سے دنیا کا دوسرا بڑا ملک ہے، وہیں وہ آئی ٹی کے حوالے سے بھی دنیا کے بڑےممالک میں شمار ہوتا ہے، لیکن ایک بھارتی رپورٹ کے مطابق گزشتہ چند ماہ سے آئی ٹی کے شعب ے میں پاکستان نے بھارت کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی ہے، کیوں کہ گزشتہ چند ماہ میں جہاں

بھارت کے آئی ٹی ملازم عالمی نوکریوں سے برطرف ہو رہے ہیں، وہیں پاکستانی آئی ٹی کے افراد یہ ملازمتیں حاصل کرنے میں کامیاب ہورہے ہیں، آؤٹ لک انڈیا کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ دو سال سے بھارتی آئی ٹی صنعت میں ملازمتوں سے برطرفی کی شرح میں سنگین حد تک اضافہ ہوا ہے جبکہ پاکستان میں اس کے برعکس اس شعبے میں روزگار کے مواقع بڑھے ہیں،پاکستان جس معاملے میں بھارت کو صحیح معنوں میں زک پہنچا سکتا ہے وہ آئی ٹی ملازمتوں کا حصول ہے، جس کی صنعت تیزی سے آگے بڑھ رہی ہے اور یہاں ڈیٹا آپریٹرز اور بی پی او کالرز نسبتاً سستے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان نے آئی ٹی کے شعبے میں اپنے حریف ملک بھارت کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی، جس کا اعتراف خود بھارتی میڈیا بھی کر رہی ہے، بھارتی میڈیا کے مطابق آئی ٹی کے شعبے میں پاکستان کے ابھر کر سامنے آنے کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ ہفتے امریکا سے تعلق رکھنے والی ایک آئی ٹی کمپنی نوئیڈا نے بھارت میں 125 افراد کو ملازمت سے فارغ کیا، مگر اسی روز اسلام آباد میں اسی کمپنی نے لگ بھگ اتنے ہی تعداد میں اسلام آباد میں لوگوں کو بھرتی کیا،پاکستان سافٹ وئیر ہاؤسز ایسوسی ایشن کے سیکرٹری جنرل شہریار حیدری نے بتایا کہ اس وقت ہر سال دس ہزار کے قریب آئی ٹی گریجوٹ جاب مارکیٹ کا حصہ بن رہے ہیں اور انڈسٹری کی قدر تین ارب ڈالرز تک جاپہنچی ہے، جو کہ بھارتی صنعت کے مقابلے میں اتنی زیادہ نہیں، مگر یہ پڑوسی ملک کے لیے لمحہ فکریہ ضرور ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
75%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
25%
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

ٹیکنالوجی خبریں

تازہ ترین تصاویر


>