تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

بھارت میں اساتذہ کی 88طالبات کے ساتھ شرمناک حرکت

  2 دسمبر‬‮ 2017   |    10:11     |     بین الاقوامی

گوہاٹی(ویب ڈیسک) بھارت میں ایک اسکول کے 3 اساتذہ نے 88 طالبات کو سزا کے طور پر دیگر طالبات کے سامنے زبردستی بے لباس کردیا جب کہ پولیس نے اساتذہ کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست ارونا چل پردیش کے ایک گرلز اسکول میں چھٹی اورساتویں جماعت

کی 88 طالبات کو برہنہ کرنے کا گھناؤنا واقعہ پیش آیا، واقعے کا علم متاثرہ طالبات کے اہل خانہ کو ہوا تو انہوں نے ایک طلبا تنظیم سے رجوع کیا جس نے تینوں اساتذہ کے خلاف ایف آئی آر درج کرادی ہے۔پولیس ایف آئی آر کے مطابق 3 اساتذہ نے 88 طالبات کو اس وقت سب کے سامنے کپڑے اتارنے پر مجبور کیا جب انہیں ایک پرچہ ملا جس پر ہیڈ ماسٹر اور دیگر طالبات کے بارے میں بیہودہ الفاظ درج تھے، سزا کے طور پر اساتذہ نے تمام طالبات کو جبراً بے لباس کردیا۔مقامی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس نے ایف آئی آر درج کرائے جانے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ کیس ویمن پولیس اسٹیشن ٹرانسفر کردیا ہے اب اساتذہ و طالبات سے تحقیقات کی جارہی ہیں۔ طلبا تنظیم نے طالبات کو بے لباس کیے جانے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اگر کوئی معاملہ تھا تو اسکول انتظامیہ نے طالبات کے والدین سے بات کیوں نہیں کی۔اس حوالے سے ارونا چل پردیش کانگریس کمیٹی نے بھی اساتذہ کے اقدام کی سخت مذمت کرتے ہوئے ملوث اساتذہ کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ عمل بچوں کے تحفظ کے لیے بنائے گئے قانون کی کھلی خلاف ورزی ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

بین الاقوامی خبریں

 
 

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>