تازہ ترین :

شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

الم ﴿۱﴾یہ کتاب (قرآن مجید) اس میں کچھ شک نہیں (کہ کلامِ خدا ہے۔ خدا سے) ڈرنے والوں کی رہنما ہے ﴿۲﴾ جو غیب پر ایمان لاتے اور آداب کے ساتھ نماز پڑھتے اور جو کچھ ہم نے ان کو عطا فرمایا ہے اس میں سے خرچ کرتے ہیں 

ad

واقعہ کہاں پیش آیا ؟ جانئےخبر کے اندار

  2 دسمبر‬‮ 2017   |    08:01     |     بین الاقوامی

لاس اینجلس (نیوز ڈیسک)ایک مشتبہ ماں کو اپنی نوزائیدہ بچی کو زندہ دفنانے کے جرم میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق لاس اینجلس میں دو بہنوں نے اپنے قدموں کے نیچے ایک نوزائیدہ بچی کے رونے کی آواز سنی تو انہیں یقین نہ آیا۔ایوانجیلینا میک کیری نے اپنی بہن اینجیلینا کی توجہ آواز کی طرف مبذول کرائی تو انہوں نے خیال کیا کہ یہ کوئی بلی ہے

مگر غور سے سننے پر انہیں واضح طور پر بچی کے رونے کی آواز سنائی دی۔انہوں نے فوراً مدد کے لیے 911 پر کال کی جہاں سے ایل اے شیرف ڈیپارٹمنٹ سے افسران موقع پر پہنچ گئے۔انہوں نے کنکریٹ کے ٹکڑے ہٹائے تو نیچےگڑھے میں ایک نوزائیدہ بچی جس کی عمر 48 گھنٹے سے بھی کم تھی، رو رہی تھی۔ پولیس نے اپنے بیان میں بتایا کہ بچی کو دریا کے کنارے دفنایا گیا تھا۔پولیس نے میڈیا کا بھی شکریہ ادا کیا، جس کی وجہ سے وہ اس مشتبہ عورت کو گرفتار کرنے کے قابل ہوئے جو اسے وہاں دفنا گئی تھی۔پولیس نے بتایا کہ جس وقت بچی کو گڑھے سے نکالا گیا وہ سردی سے ٹھٹھر رہی تھی،اس کے گرد کسی ہسپتال کا کمبل لپٹا ہوا تھا، جس وقت اسے دریافت کیا گیا، اس کی عمر36 سے 48 گھنٹے تھی ۔طبی عملے کےمطابق بچی کی حالت اب کافی بہتر ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ بچی خوش قسمت ہےجو زندہ بچ گئی۔ لاس اینجلس میں اس طرح کے واقعات سے بچنے کےلیے بے بی سیف سرینڈر پروگرام بھی شروع کیا ہوا ہے، جس کے تحت کوئی شخص کسی بھی بچے کو ہسپتال یا فائر اسٹیشن پر چھوڑ کر جا سکتا ہے اور اس سے کوئی سوال نہیں کیا جاتا، اس کے باوجود اس طرح کا واقعہ حیران کن ہے۔

اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 
اپنی رائے کا اظہار کریں -

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

بین الاقوامی خبریں

 
 

تازہ ترین خبریں

تازہ ترین تصاویر


>